اہم خبریںپاکستانتازہ ترین

دی اکانومسٹ میں چھپنے والا کالم زبانی لکھوایا: عمران خان

میڈیا رپورٹس کے مطابق سابق وزیراعظم نے یہ بھی کہا کہ ان کی جماعت کے لیے الیکشن لڑنا مشکل کر دیا گیا لیکن اس کے باوجود انتخابات بروقت ہونے چاہیے۔

راولپنڈی کی اڈیالہ جیل میں قید سابق وزیراعظم عمران خان نے گذشتہ ہفتے بین الاقوامی جریدے ’دی اکانومسٹ‘ میں شائع ہونے والے کالم کی ذمہ داری لیتے ہوئے کہا ہے کہ ’انہوں نے یہ زبانی لکھوایا تھا جس کے بعد اس کی اشاعت ہوئی۔‘
میڈیا رپورٹس کے مطابق پیر کو عمران خان نے جیل کے اندر چند صحافیوں سے غیررسمی گفتگو کرتے ہوئے ایک صحافی کے سوال کے جواب میں کہا کہ ’انہوں نے کالم سے متعلق زبانی ہدایات دی تھیں۔ ان گائیڈ لائنز کے نتیجے میں ہی کالم لکھا گیا اور شائع ہوا، میں نے یہ زبانی ڈکٹیٹ کروایا تھا۔‘
انہوں نے اس موقع پر یہ بھی کہا کہ اگلے ہفتے ان کی ایک تقریر بھی جاری کی جائے گی۔
عمران خان کا کہنا تھا کہ آج کل مصنوعی ذہانت (اے آئی) کا زمانہ ہے۔
میڈیا رپورٹس کے مطابق سابق وزیراعظم نے یہ بھی کہا کہ ان کی جماعت کے لیے الیکشن لڑنا مشکل کر دیا گیا لیکن اس کے باوجود انتخابات بروقت ہونے چاہیے۔
عمران خان نے ’دی اکانومسٹ‘ میں چھپنے والے کالم میں کہا تھا کہ پی ٹی آئی کو لیول پلیئنگ فیلڈ نہیں مل رہی۔
اس مضمون کے شائع ہونے کے بعد نگراں وفاقی وزیر اطلاعات مرتضیٰ سولنگی نے کہا تھا کہ ’یہ عمران خان نے نہیں لکھا اور اس بارے میں حکومت اکانومسٹ کو خط بھیجے گی۔‘ اس بیان کے بعد ’دی اکانومسٹ‘ نے پیر کی صبح عمران خان کا شائع کردہ مضمون ایک مرتبہ پھر پوسٹ کر دیا تھا۔
وزیر اطلاعات کے اس بیان کے بعد یہ مضمون سوشل میڈیا پر بہت زیادہ گردش کر رہا ہے اور ایک اندازے کے مطابق یہ حالیہ برسوں میں ’دی اکانومسٹ‘ کی سب سے زیادہ پڑھی جانے والی تحریروں میں سے ایک ہے۔

مزید دکھائیں

متعلقہ مضامین

ایک تبصرہ

  1. I do believe all the ideas youve presented for your post They are really convincing and will certainly work Nonetheless the posts are too short for novices May just you please lengthen them a little from subsequent time Thanks for the post

Back to top button