اہم خبریںتازہ ترینجنرل

لکی مروت حملے کے شہید کیپٹن کی رواں ماہ شادی تھی، آئی ایس پی آر

کیپٹن محمد فراز الیاس شہید نے 2020 میں پاکستان آرمی کی ناردرن لائٹ انفنٹری میں کمیشن حاصل کیا، انہوں نے رواں ماہ کی 19 تاریخ کو رشتہ ازدواج میں منسلک ہونا تھا

لاہور پاکستان(نمائندہ وائس آف جرمنی):‌پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کے مطابق لکی مروت میں پاک فوج کی گاڑی پر حملے میں شہید ہونے والے 26 سالہ کیپٹن محمد فراز الیاس کا تعلق قصور سے ہے۔کیپٹن محمد فراز الیاس شہید نے 2020 میں پاکستان آرمی کی ناردرن لائٹ انفنٹری میں کمیشن حاصل کیا، انہوں نے رواں ماہ کی 19 تاریخ کو رشتہ ازدواج میں منسلک ہونا تھا۔آئی ایس پی آر کے مطابق کیپٹن محمد فراز الیاس شہید نے سوگواران میں والدین اور بہن بھائی چھوڑے ہیں۔صوبیدار میجر محمد نذیر شہید کا تعلق ضلع اسکردو سے ہے، انہوں نے 31 سال تک دفاع وطن کا فریضہ سرانجام دیا۔آئی ایس پی آر کے مطابق صوبیدار میجر محمد نذیر شہید نے سوگواران میں اہلیہ، 2 بیٹے اور 5 بیٹیاں چھوڑی ہیں۔لانس نائیک حسین علی خان شہید کا تعلق ضلع غذر سے ہے، انہوں نے پاک آرمی میں 14 سال تک خدمات سرانجام دیں۔آئی ایس پی آر کے مطابق لانس نائیک حسین علی شہید نے سوگواران میں والدین اور بہن بھائی چھوڑے ہیں۔سپاہی منظور شہید کا تعلق ضلع گلگت سے ہے، انہوں نے پاکستان آرمی میں 6 سال تک دفاع وطن کےلیے خدمات سرانجام دیں اور سوگواران میں اہلیہ اور3 بیٹیاں چھوڑی ہیں۔آئی ایس پی آر کے مطابق لانس نائیک محمد انور شہید کا تعلق ضلع گانچھے سے ہے، انہوں نے پاکستان آرمی میں 13 سال تک دفاع وطن کا فریضہ سرانجام دیا۔لانس نائیک محمد انور شہید نے سوگواران میں اہلیہ، 2 بیٹیاں اور2 بیٹے چھوڑے ہیں۔
آئی ایس پی آر کے مطابق سپاہی اسد اللّٰہ شہید کا تعلق ملتان سے ہے، انہوں نے پاکستان آرمی میں 14 سال تک ملکی دفاع کے فرائض سرانجام دیے اور سوگواران میں اہلیہ اور ایک بیٹا چھوڑا ہے۔سپاہی راشد محمود شہید کا تعلق راولپنڈی سے ہے، سپاہی راشد محمود شہید نے پاکستان آرمی میں 13 سال تک دفاع وطن میں خدمات سرانجام دیں اور سوگواران میں والدین اور بہن بھائی چھوڑے ہیں۔

مزید دکھائیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button