جنرل

پنجاب میں حکومت و گورننس کے نظام میں انقلابی تبدیلی کا انقلابی فیصلہ

فالتو، نکمے اور خساروں کے شکار اداروں کی ڈاؤن سائزنگ کی جائے گی،ایک ہی کام کرنے والے زائد اداروں کو ختم کردیا جائے گا ،وزارتوں کا حجم کم کرکے سرکاری امور میں آسانی پیدا کی جائے گی،ری سٹرکچرنگ اور ڈاؤن سائزنگ سے اربوں روپے کی بچت ہوگی

پاکستان،لاہور(نمائندہ وائس آف جرمنی): پنجاب میں حکومت اور گورننس کے نظام میں انقلابی تبدیلی کے لئے انقلابی فیصلہ کیا گیا ہے-پنجاب میں وزارتوں اور محکموں کی تاریخ کی سب سے بڑی ری سٹرکچرنگ کا فیصلہ کیا گیا جس کے تحت فالتو، نکمے اور خساروں کے شکار اداروں کی ڈاؤن سائزنگ کی جائے گی-ایک ہی کام کرنے والے زائد اداروں کو ختم کردیا جائے گا-وزیراعلی پنجاب مریم نواز شریف نے ری سٹرکچرنگ کے منصوبے کی منظوری دے دی ہے-وزارتوں کا حجم کم کرکے سرکاری امور کی انجام دہی میں آسانی پیدا کی جائے گی-ایک ہی کام کرنے والے اداروں کو ضم کیا جائے گا ری سٹرکچرنگ اور ڈاؤن سائزنگ سے اداروں کی کارکردگی اور عوامی خدمت کے عمل کو سادہ، آسان اور تیز بنایاجائے گا-ری سٹرکچرنگ اور ڈاؤن سائزنگ سے اربوں روپے کی بچت ہوگی- حکومت کے سالانہ اخراجات میں بڑی کمی ہونے سے مالی گنجائش پیدا ہوگی-

مزید دکھائیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button