کاروبار

آئی ایم ایف کا مطالبہ: طلبا کے لیے بڑی خبر آگئی

تفصیلات کے مطابق بجٹ25-2024 میں عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے کتابوں پر بھی ٹیکس عائد کرنے کا مطالبہ کردیا۔

آئی ایم ایف کے مطالبے کے بعد طلبا کے لیے بڑی مشکلات کھڑی ہونے کا امکان ہے، جس سے کتابیں ، کاپیاں ، پنسل اور پین کی خریداری مشکل ہوجائے گی۔تفصیلات کے مطابق بجٹ25-2024 میں عالمی مالیاتی فنڈ (آئی ایم ایف) نے کتابوں پر بھی ٹیکس عائد کرنے کا مطالبہ کردیا۔آئی ایم ایف کا کہنا ہے کہ بجٹ میں کتابوں اور کاپیوں پر ٹیکس چھوٹ ختم کی جائے اور اسٹکی نوٹ پیپرز، فوٹو پیپر اور فینسی گتے پر بھی ٹیکس لگایا جائے۔عالمی مالیاتی فنڈ کی جانب سے مختلف طرح کے طباعتی کاغذ اور رائٹنگ ڈائری پر بھی ٹیکس لگانے کا مطالبہ کرتے ہوئے مشق کی کتابوں ، پنسل اور پین پر بھی ٹیکس چھوٹ ختم کرنے کی تجویز دی۔ذرائع کا کہنا ہے کہ اس حوالے سے ایف بی آر حکام کل وزیراعظم کو آئندہ مالی سال کے بجٹ پر بریفنگ دیں گے۔یاد رہے پاکستان سے مذاکرات کے بعد عالمی مالیاتی فنڈ نے اعلامیہ جاری کیا تھا، اعلامیے میں کہا گیا تھا کہ پاکستان کی حکومت آمدن بڑھانے کے لیے سنجیدہ کوششیں کر رہی ہے، پاکستان میں مراعات یافتہ طبقہ سے ٹیکس کی منصفانہ وصولی ہونی چاہئے۔عالمی مالیاتی فنڈ کی جانب سے کہا گیا تھا کہ پاکستان نے آئی ایم ایف سےنئےقرض پروگرام کی باضابطہ درخواست کی، جس پر چیف نیتہن پورٹر کی زیرصدارت وفد نے پاکستان کا دورہ کیا، دورے کے دوران پاکستان کی معیشت کی بہتری کیلئے 13سے 23 مئی تک طویل مذاکرات کیے گئے۔

مزید دکھائیں

متعلقہ مضامین

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

Back to top button